Faisalabad: Nazaba videos case, Khawatin ka apne kapre khud pharne ka itraaf

Nazaba videos case, Khawatin ka apne kapre khud pharne ka itraaf

فیصل آباد: نازیبا ویڈیوز معاملہ،خواتین کا اپنے کپڑے خود پھاڑنے کا اعتراف

فیصل آباد:(دنیا نیوز)تھانہ ملت ٹاون کے علاقے میں خواتین پر تشدد اور نازیبا ویڈیوز کے معاملے میں نیا موڑ آیا ہے اور بھکاری خواتین نے اپنے کپٹرے خود پھاڑنے کا اعتراف کرلیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق فیصل آباد میں ایم پی اے فردوس رائے اور ویمن پروٹیکشن اتھارٹی کی چیئرپرسن کی خواتین سے ملاقات ہوئی ۔

رکن پنجاب اسمبلی فردوس رائے نے کہا کہ متاثرہ خواتین اپنے کیے پر شرمندہ ہیں اور خواتین نے اعتراف کیا ہے کہ دکانداروں نے ہمارے کپڑے نہیں پھاڑے ۔

ایم پی اے کا مزید کہنا تھا کہ پولیس ہر پہلو سے کیس کی تحقیقات کر رہی ہے جبکہ اعلیٰ افسران کی تحقیق کے بعد قصورواروں کو سزا ضرور ملےگی۔

خیال رہے کہ گزشتہ دنوں فیصل آباد کے تھانہ ملت ٹاؤن میں دکانداروں کی جانب سے مبینہ طور پر خواتین کے کپٹرے پھاڑنے اور ویڈیوز بناکر وائرل کرنے کا معاملہ سامنے آیا تھا جس کے بعد 5ملزمان کو گرفتار کیا گیا تھا۔

Faisalabad: Nazeeba videos case, women confess to tearing their own clothes

Faisalabad: (Dunya News) A new twist has come in the case of violence against women and vulgar videos in the area of ​​Millat Town police station and the begging women have confessed to tearing their clothes themselves.

According to details, MPA Firdous Rai and chairperson of Women Protection Authority met the women in Faisalabad.

Punjab Assembly member Firdous Rai said that the affected women are ashamed of what they have done and the women have admitted that the shopkeepers did not tear our clothes.

The MPA further said that the police was investigating the case from all angles while the culprits would be punished after investigation by the senior officers.

It may be recalled that in the last few days, a case of alleged tearing of women’s clothes and making videos viral by shopkeepers in Millat Town police station of Faisalabad came to light after which 5 accused were arrested.

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *